تین کروڑ روپے سے تعمیر شدہ عمارت مکمل ہونے کے باوجود ریسکیو 1122کی سروس فعال نہ کرنے شہریوں کابلڈنگ کے باہر احتجاج دھرنا اسسٹنٹ کمشنر سلمان ظفر کی جلد سروس فعال کرنے کی یقین دہانی

پیرمحل(نامہ نگار) تین کروڑ روپے سے تعمیر شدہ عمارت مکمل ہونے کے باوجود ریسکیو 1122کی سروس فعال نہ کرنے شہریوں کابلڈنگ کے باہر احتجاج دھرنا اسسٹنٹ کمشنر سلمان ظفر کی جلد سروس فعال کرنے کی یقین دہانی تفصیل کے مطابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کی آبائی تحصیل پیرمحل میں تین کروڑ روپے سے ریسکیو1122کی عمارت مکمل جوکہ عرصہ دوسال سے مکمل ہوکر بند پڑی ہے تحصیل پیرمحل سے لاہور کراچی موٹروے پر آئے روز حادثات ہونے کے باوجود سروس فعال نہ کی گئی شہریوں اور سیاسی سماجی مذہبی تنظیموں کے کارکنان نے ریسکیو 1122پیرمحل کی عمارت کے باہر احتجاج کرتے ہوئے دھرنا دیا مظاہرین نے ہاتھوں میں فلیکس اٹھا رکھے تھے جس پر ریسکیوسروس فعال کرنے کے نعرے درج تھے گورنر پنجاب کا آبائی شہر ریسکیو سروس سے محروم کی تحریر کا بینر بھی آویزاں کیا گیا ریکسیو 1122سروس فعال کرنے کی نشاندہی نجی فلاحی تنظیم خدمت خلق گروپ کی جانب سے کی گئی جس پر شہریوں اورمسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی جماعت اسلامی سمیت سینکڑوں کی تعداد میں عوام نے دھرنا احتجاج میں شرکت کی جبکہ ایم این اے اور پی ٹی آئی کے عہدیداران نے دھرنا اور احتجاج کی بھرپورمخالفت کی اور کسی بھی کارکن عہدیدارکو دھرنا میں شامل ہونے پر جماعت سے فارغ کرنے کا سخت پیغام دیا اسسٹنٹ کمشنر سلمان ظفر دھوتھڑ نے مظاہرین سے مذاکرات کرتے ہوئے جلد سروس کی فراہمی کا یقین دلایا جس پر مظاہرین نے کئی گھنٹوں کے احتجاج دھرنا کو پر امن ختم کردیا
پیرمحل(نامہ نگار) نجی موبائل کمپنی فرنچائز کے باہر دن دیہاڑے ڈکیتی کی واردات موٹرسائیکل سوار نامعلوم مسلح ڈاکواسلحہ کی نوک پر کمپنی ملازم سے 8لاکھ روپے لوٹ کر فرارہوگئے اطلاع کے باوجود تھانہ پیرمحل پولیس ایک گھنٹہ لیٹ پہنچی ایس ایچ او تھانہ صدر نے جائے وقوعہ دیکھنے کے لیے گاڑی سے اترنا بھی گوارا نہ کیا ڈاکودن دیہاڑے نقدی چھین کر پولیس کی غفلت کے باعث فرارہوگئے

اپنا تبصرہ بھیجیں